Ye Parcham-e-Abbas Sada Ooncha Rahe Ga

یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا
کربوبالا کی داستان دوہراتا رہے گا

یہ پرچم عبّاس ہے اسلام کا پرچم
اسلام کا پرچم ہے تو ایمان کا پرچم
ہر جنگ میں انچا رہا اس شان کا پرچم
ظالم کا دل ہمیشہ یہ دہلاتا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

اس پرچم عبّاس کو احمد نے سجایا
ہر جنگ میں حیدرنے وقار اسکا بڑھایا
آیا جو وقط صلح تو شبّر نے اٹھایا
ہر دور میں بے خوف یہ لہراتا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

جب یہ اٹھیگا عرش سلامی کو جھکیگا
یوں داستانے ظلم یہ دنیا سے کہیگا
سن کر ستم جو اشکوں کا سیلاب بہیگا
اوقات کیا ہے ظلم کی دکھلاتا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

کعبے میں اس پا ظلم کے بادل جو چھا گے
لیکر حسین اسکو بیاباں میں آ گئے
عبّاس کو دیا و ترائی تک آ گئے
تا حشر اب فرات پا لہراتا رہےگا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

جب اسکو حر نے دیکھا پشیمان ہو گیا
ناری جو تھا وصاحبے ایمان ہو گیا
پھر کیا تھا ایک جنگ کا سامان ہو گیا
کردار مسلے حر یوں ہی مہکا تا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

اسکا پھریرا فاطمہ زہرا کی دعا ہے
پنجہ علم میں آج بھی غازی کا لگا ہے
مشکے سکینہ ساتھ لئے گھوم رہا ہے
پیاسوں کا ترجمان بنا بڑھتا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

دولت لوٹی ہے فاطمہ زہرا کی سامنے
اجھڈی ہے گود بانوے مضطر کی سامنے
چادر لٹی ہے زینب مضطر کی سامنے
بے پردہ گر جو دیکھے گا تو روتا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا

تراشکوں سے ظہیر کے ہیں نین نوازش
سایے میں اس علم کرو بین نوازش
صد حیف لٹا فاطمہ کا چین نوازش
نوحہ میرا یہ حشر میں سرمایا رہے گا
یہ پرچم عبّاس صدا اونچا رہے گا


یہ پرچم عبّاس سدا انچا رہے گا
ثر پر یہ عزاداروں کے لہراتا رہے گا

یہ پرچم عبّاس ہے اسلام کا پرچم
اوقات کیا ہے ظلم کی دکھلاتا رہے گا

اس پرچم عبّاس کو احمد نے سجایا
تا حشر علقمہ پا یہ پھراتا رہے گا

جب یہ اٹھیگا عرش سلامی کو جھکے گا
ظالم کا دل ہمیشہ یہ دہلاتا رہے گا

لے کر حسین اسکو بیا باں میں اے تھے
محور ہے اب وفا کا یوں ہی سجتا رہے گا

مشکے سکینہ ساتھ لئے گھوم رہا ہے
پیاسوں کا ترجمان بنا بڑھتا رہے گا

ہمّت نہیں کسی میں ذرا ہاتھ لگا لے
ظالم کا دل ہمیشہ یہ دہلاتا رہے گا

بدرو احد میں خیبر و خندک میں تھا یہ ہی
ظلم ستم سے جنگ سدا کرتا رہے گا

چادر لٹی ہے زینب مضطر کی سامنے
بے پردا گر جو دیکھےگا تو روتا رہے گا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *