Har dor main dene haq ke liyen – har hal imamat hoti hai

ہر دور میں دین حق کے لئیں ہر حال امامت ہوتی ہے
ظاہر و رہے یا غیاب ہوں ہر حال ہدایت ہوتی ہے

احوال سے سبکے واقف ہیں پھر بھی میری الفت کہتی ہے
تم لکھ کے عریضہ بھیجو تو اس طرح بھی نصرت ہوتی ہے

جو خاص خدا کے بندے ہیں دیکھا ہے زامنے نے انکی
کعبے میں ولادت ہوتی ہے مسجد میں شہدت ہوتی ہے

قرآن اور الے احمد کا آپس میں کچھ ایسا رشتہ ہے
تیروں پا عبادت ہوتی ہے نیزے پا تلاوت ہوتی ہے

زہرہ کے گجر کو چاک کیا مسند پا علی کی بیٹھ گئے
پہلو میں نبی کے جا لیٹو کیا یہ بھی فضیلت ہوتی ہے

کچھ لوگ یہ ہمسے کہتے ہیں ظالم پا تببرا ٹھیک نہیں
حقدار کا حق جب چنتا ہے الله کی لعنت ہوتی ہے

سجدے میں سدا خالق کے ظہیر ماں باپ کو اپنے یاد رکھو
ماں باپ ک قدموں کے نیچے اولاد کی جنّت ہوتی ہے