Sahar Qareeb hai Suraj Nikalne wala hai

سحر قریب ہے سورج نکلنے والا ہے
اندھیرا ظلمو ذلالت کا چاٹنے والا ہے

حسن کے گھر میں جو یہ بارویں کی آمد ہے
یہی بتول کا روزہ بنانے والا ہے

سدا یہ آتی ہے کربو بلا کے جنگل سے
یزیدیت کا جنازہ نکلنے والا ہے

فلک پا آج سجی ہے شعبے براتا ظہیر
زمیں کا آج مقدّر سوارنے والا ہے